وزیر اعظم عمران خان نے 19 اکتوبر 2020 کو کلین گرین پاکستان انڈیکس آف پنجاب اور کے پی کے کے حوصلہ افزائی کے پروگرام کے تحت نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے شہروں کا اعلان کیا ہے۔ اٹک ، بہاولپور ، لاہور ، گجرات اور راولپنڈی کے پی کے کے لئے: بنوں ، کوہاٹ اور پشاور کو تسلیم کرلیا گیا ہے۔
ہمیں فالو کریں

کالجوں کے لئے رہنما اصول۔ صاف سبز پاکستان

  • ہوم
  • کالجوں کے لئے رہنما اصول۔
image

ادارہ میں گورننگ باڈی کی تشکیل

ہر یونیورسٹی میں کلین گرین پاکستان کے لئے ایک اسٹیئرنگ کمیٹی تشکیل دیں (جس میں وائس چانسلر ، 2-3 پروفیسرز اور یونیورسٹی میں کلین گرین اسکاؤٹس / چیمپیئن کے صدر بھی شامل ہیں)۔

کالجوں کے لئے رہنما اصول۔ صاف سبز پاکستان

کلین گرین اسکاؤٹس / چیمپیئن کی رجسٹریشن اور کردار

ہر کلاس میں سے کم از کم دو چیمپیئن (مساوی صنفی تقسیم کے ساتھ) جو کلین گرین اسکاؤٹس / چیمپیئن کے طور پرکام کرنے کے خواہشمندہوں بھرتی کریں۔ کلین گرین اسکاؤٹس / چیمپیئن تعلیمی کمیٹی اور ان کے ہم جماعتوں کے مابین ہم آہنگی اور مختلف مہمات اور سرگرمیوں کے لئے انفارمیشن شیئرنگ پوائنٹ(معلومات کی ترسیل کا ذریعہ) کے طور پر کام کریں گے۔

ریسورس موبلائزیشن

کالجوں میں سی اینڈ جی پی ایم ، کلین گرین اسکاؤٹ / چیمپیئن کی معاون سرگرمیوں کے لئے فنڈ کی تشکیل دیں ۔ سی اینڈ جی پی ایم کے لئے مالی اعانت نجی شعبے ، طلباء اور فنڈ اکٹھا کرنے جیسی تقریبات وغیرہ کے ذریعہ پیدا کی جانی چاہیے۔

ماڈیول ڈویلپمنٹ

سی اینڈ جی پی ایم کاتصور ، کلین گرین اسکاؤٹس کا کردار اور ذمہ داریاں ، وسائل کو متحرک کرنا ،ٹاسک تفویض کرنا اور سماجی مہم کے بارے میں ایک ماڈیول تیار کریں۔

ایوارڈز اورقدر دانی

سبق کے ساتھ ہر ڈگری کے 2 کریڈٹ اوقات کو صاف اور سبز سرگرمی کی تحریک کے ساتھ منسلک کریں۔ ہر سرگرمی میں شرکت کے 20 پوائنٹس ہوں گے جبکہ 100 پوائنٹس 1 کریڈٹ آور کے برابر ہوں گے۔

رپورٹنگ/اطلاع دینا

کالج سی اینڈ جی پی ایم کے پانچوں ستونوں پر مبنی سالانہ پیشرفت کے لئے ایک فارم پُر کرے گا اور اسے کالج ڈائریکٹوریٹ میں جمع کروائے گا ۔جو پھر صوبائی حکومت کے ماتحت وزارت موسمیاتی تبدیلی کے بنائے گئے ڈیش بورڈ پر اس ڈیٹا کو اپ لوڈ کردیں گے

درجہ بندی

سی اینڈ جی پی ایم درجہ بندی کا صوبائی سیل ترجیحی چھ ماہ کی کارکردگی کی بنیاد پر ہر ضلع سے تین اعلی کارکردگی دکھانے والے کالجوں کو تعریفی سرٹیفکیٹ جاری کرے گا۔

کلین گرین پاکستان موومنٹ کے پانچ ستونوں کے لئے مخصوص سرگرمیاں

شجر کاری (درخت لگانا)

  • محکمہ جنگلات کے ما تحت بیج پھینکنے کی مہم میں حصہ لینا۔
  • کالجوں میں اور قریبی عوامی مقامات پر ایک طالب علم کے ذریعہ ایک پودا لگانے کےحدف کے ساتھ سالانہ درخت لگانے کی تقریب کا اہتمام کرنا
  • بوائی کے موسم میں سالانہ دومرتبہ آگاہی مہم کا اہتمام کرنا ، جس میں کالج کے ذریعہ درختوں کی شجرکاری اور سبز ماحول کے موضوع کے ساتھ کم سے کم 100 بینرز / پوسٹر عوامی مقامات پر آویزاں کیے جائیں ۔

ٹھوس فضلہ کی انتظام کاری

  • مقامی حکومت کے منتخب کردہ علاقوں میں سالانہ دوبار" ہفتہ صفائی" کا اہتمام کریں۔
  • صاف ماحول اور ٹھوس فضلہ کو الگ کرنے کے مرکزی خیال کے ساتھ کم از کم 100 بینرز / پوسٹر چسپاں کریں۔
  • مقامی میونسپل کمیٹی / کارپوریشن کے لئے ہر متبادل مہینے میں ٹھوس کچرے کے نامناسب علاقوں کی نقشہ سازی/نشاندہی کریں
  • یونیورسٹی کے ٹھوس فضلہ کی ری سائیکلنگ اور کچرے کو الگ تھلگ کرنے کے لیے ہاسٹلز اور کیمپس کی سطح پر اس کومتعارف کروائیں۔ غیرضروری فضلہ کے استعمال کی حوصلہ شکنی اوری سائیکلنگ مواد اور مصنوعات کے استعمال کو فروغ دینے کی ترغیب دیں۔
  • کالجوں کے ٹھوس فضلہ کے لئے لینڈفل سائٹ کو مختص اور نشان دہی کریں - ری سائیکل شدہ فضلہ کے موثر استعمال اور غیر قابل تجدید فضلہ کے مناسب تصرف کے انتظامات کیلئے مقامی حکومت یا نجی شعبے سے معاہدہ کریں۔

مائع فضلے کی انتظام کاری (لیکویڈ ویسٹ مینجمنٹ ) اور صفائی ستھرائی

  • ملحقہ کمیونٹیز اور سکولوں میں نجی شعبے کے تعاون سے ہاتھ دھونے کے دن کا اہتمام کریں۔
  • لیٹرین اور گندے پانی کے نکاس کےلئے کھلے نالوں کے استعمال کی حوصلہ شکنی کریں، سوائے بارش کے پانی کے۔
  • سیپٹک ٹینک کےڈیزائن اور انتظام سے متعلق اگاہی مواد کو ملحقہ کمیونٹی میں ایک ہزار گھرانوں تک پھیلائیں۔
  • گندے پانی صاف کرنے والے پلانٹ کے کامیاب معاشی ماڈل پر کم سے کم ایک سالانہ اشاعت تیار کریں۔

مکمل سینی ٹیشن

  • مقامی حکومتوں کی شناخت کردہ زیادہ خطرے والی کمیونٹیز میں لیٹرین کے دن کو منائیں ۔
  • سیپٹک ٹینکوں کے معاشی اور قابل عمل ماڈل پر کم از کم ایک سالانہ اشاعت کریں
  • سالانہ 500گھرانے جو رفع حاجت کےلئے میدان کا استعمال کرتے ہیں ان میں پی اے ٹی ایس کے نقطہ نظر کو نافذ کریں اور پی اے ٹی ایس پر شواہد کی بنیاد پرمبنی تحقیقات کی اشاعت کریں
  • کالجوں میں تمام لیٹرینوں اور ہاتھ دھونے کی سہولیات کو فعال/فنکشنل بنائیں۔

پینے کا صاف پانی

  • پینے کے پانی کے تمام ذرائع پر واٹر فلٹریشن سسٹم لگائیں جہاں پینے کا صاف پانی ،کوالٹی ٹیسٹنگ کے معیار کےمطابق ہو ۔
  • زیادہ خطرے والی کمیونٹیز میں پانی کے دن کو منائیں (مقامی حکومتوں کے ذریعہ ان کمیونٹیز کی شناخت کریں)۔
  • کمیونٹیز میں گھریلو سطحوں پر پانی کی حفاظت اور پانی کی صفائی کے بارے میں شعور پیدا کریں۔
  • پینے کے پانی کے مناسب استعمال کو فروغ دیں اور گاڑی کی دھلا ئی، گلی کی صفائی وغیرہ کے لئے پینے کے پانی کے غیر ضروری استعمال کی حوصلہ شکنی کریں۔
  • واٹر فلٹریشن کے معاشی طریقوں پر کم سے کم ایک سالانہ اشاعت تیار کریں۔